37

اسلام آباد میں 20 خواتین کے ساتھ زیادتی میں ملوث ملزم گرفتار

سفاک ملزم نے اسلام آباد پولیس کی لیڈی پولیس اہلکار کو بھی زیادتی کا نشانہ بنایا

سفاک ملزم نے اسلام آباد پولیس کی لیڈی پولیس اہلکار کو بھی زیادتی کا نشانہ بنایا

وفاقی دارالحکومت کے تھانہ کورال کے علاقے میں پولیس نے 20 سے زائد خواتین کے ساتھ زیادتی اور لوٹ مار میں ملوث ملزم کو گرفتار کرلیا۔

ایس پی رورل زون رانا عبدالوہاب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ تھانہ کورال پولیس نے 20 سے زائد خواتین کے ساتھ زیادتی اور لوٹ مار میں ملوث 25 سالہ ملزم کو گرفتار کرلیا جو مڈل پاس ہے اور گھروں میں بطور باورچی کام کرتا تھا۔

سفاک ملزم نے دو سال پہلے اسلام آباد پولیس کی لیڈی پولیس اہلکارکے ساتھ زیادتی کی تھی۔ گرفتار ملزم ظہیر احمد آزاد کشمیر کا رہائشی ہے اور اس نے 20 سے زائد خواتین کے ساتھ زیادتی کرنے کا انکشاف کیا ہے۔

ملزم جھاڑیوں میں بیٹھ کر اکیلی خاتون کی تاک میں رہتا تھا اور خواتین کو بے ہوش کرنے کے لئے کلوروفارم کا استعمال کرتا تھا۔ خاتون کو اکیلا دیکھ کر زبردستی جنگل میں لے جاکر زیادتی کرتا اور قیمتی اشیاء چھیننے کے بعد فرار ہو جاتا۔

ملزم کے قبضہ سے وارداتوں کے دوران چھینے ہوئے موبائلز فون و قیمتی اشیاء برآمد ہوئی ہیں۔ ملزم کو جدید تکنیکی بنیادوں پر ایس ایچ او کورال اور ٹیم نے گرفتار کیا اور اس کے خلاف درج شدہ مقدمات میں مزید تفتیش شروع کردی ہے۔ پولیس کے مطابق ملزم نے بتایا ہے کہ بچپن میں اسے بھی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

ڈی آئی جی آپریشنز اور ایس ایس پی آپریشنز نے پولیس ٹیم کو شاباش کے ساتھ تعریفی سرٹیفیکیٹ دینے کا اعلان کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں