44

اسپتالوں میں آکسیجن کی فراہمی کی صلاحیت دباؤ کا شکارہے، اسد عمر

ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی صورتحال تشویشناک ہوتی جارہی ہے، اسد عمر۔ فوٹو:فائل

ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی صورتحال تشویشناک ہوتی جارہی ہے، اسد عمر۔ فوٹو:فائل

کراچی: وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اسپتالوں میں آکسیجن کی طلب میں اضافے کے باعث آکسیجن کی فراہمی کی صلاحیت اب دباؤ کا شکارہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق گورنرہاﺅس کراچی میں کورونا وائرس کی تیسری لہر اور ایس او پیز پر عملدرآمد سے متعلق اعلیٰ سطحی اجلاس ہوا، جس کی صدارت صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کی، اجلاس میں وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر، گورنر سندھ عمران اسماعیل، وفاقی وزیرعلی حیدر زیدی، سینیٹر سیف اللہ ابڑو، ایم این اے جے پرکاش، اراکین صوبائی اسمبلی فردوس شمیم نقوی، خرم شیر زمان، حلیم عادل شیخ اور بلال غفار بھی شریک ہوئے۔

اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا تھا کہ ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی صورتحال تشویشناک ہوتی جارہی ہے، اور اسپتالوں میں آکسیجن کی طلب میں اضافے کے باعث آکسیجن کی فراہمی کی صلاحیت اب دباؤ کا شکارہے۔

اسد عمر نے بتایا کہ تشویشناک مریضوں کی موجودہ تعداد گزشتہ برس جون کی نسبت 30 فیصد سے زائد ہے، عوام احتیاطی تدابیر اختیار کریں ورنہ لاک ڈاﺅن پر مجبور ہو سکتے ہیں، ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرنے کی بھی ہدایت کی گئی ہیں، فی الحال چند مزید پابندیاں لگائی گئی ہیں امید ہے اس کے نتائج مثبت سامنے آئیں گے۔

صدر مملکت عارف علوی کا کہنا تھا کہ کورونا کی نئی لہر پہلے سے زیادہ مہلک اور بہت تیزی سے پھیل رہی ہے، عوام سے اپیل ہے کہ بہت زیادہ احتیاط کریں، حکومت کو ایک بار پھر آپ سے تعاون درکار ہے، صرف چند احتیاطی تدابیر اختیار کرکے آپ اپنے پیاروں اور ہم وطنوں کی زندگیوں کو بچا سکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں