33

بھارتی عدالت کا فلم ’رادھے‘ شیئرکرنے والے واٹس ایپ اکاؤنٹ بند کرنے کا حکم

عدالت نے ٹیلی کام کمپنیوں کوآن لائن پائریسی میں ملوث سسکرائبرز کے خلاف قانونی کارروائی کے احکامات بھی صادر کیے۔(فوٹو:فائل)

عدالت نے ٹیلی کام کمپنیوں کوآن لائن پائریسی میں ملوث سسکرائبرز کے خلاف قانونی کارروائی کے احکامات بھی صادر کیے۔(فوٹو:فائل)

 ممبئی: دہلی ہائی کورٹ نے واٹس ایپ انتظامیہ کو حکم جاری کیا ہے کہ وہ سلمان خان کی عید پر ریلیز ہونے والی فلم ’رادھے‘ کو واٹس ایپ پر شیئر کرنے والے صارفین کےاکاؤنٹ بند کرے۔

 بھارتی میڈیا کے مطابق دہلی ہائی کورٹ میں رادھے کے نشریاتی حقوق لینے والے ٹی وی چینل نے واٹس ایپ پر سلمان خان کی فلم ’رادھے‘ کی غیر قانونی شیئرنگ کو روکنے کی درخواست کی تھی۔ درخواست میں فلم کے تقسیم کار نے موقف اختیار کیا تھا کہ فلم رادھے پائریسی کا شکار ہوگئی ہے اور اسے بڑے پیمانے پر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر شیئر کیا جا رہاہے۔

یہ بھی پڑھیئے : فلم’’ رادھے‘‘ پائریسی کے ذریعے دکھانے والوں کے خلاف سائبرسیل میں شکایت درج

اس درخواست کی روشنی میں  ہائی کورٹ نے فلم کی غیر قانونی کاپی فروخت اور شیئر کرنے والے استعمال کنندگان کے واٹس ایپ اکاؤنٹس بند کرنے کا حکم جاری کیا۔ عدالت نے بھارت کی بڑی ٹیلی کام کمپنیوں کوآن لائن پائریسی میں ملوث سسکرائبرز کے فون نمبرز مدعی ( ٹی وی چینل ) کو دینے اور ان کے خلاف قانونی کارروائی کے احکامات بھی صادر کیے۔

یہ بھی پڑھئیے: سلوبھائی کی فلم ’رادھے‘ ریلیزکےایک گھنٹے بعد ہی لیک

یاد رہے کہ 13 مئی کو ریلیز ہونے والی فلم ’ رادھے‘ کو اسٹریمنگ ویب سائٹ ’’زی فائیو‘‘ پرریلیز کیا گیا تھا۔ تاہم فلم ریلیز ہونے کے کچھ گھنٹوں بعد ہی لیک ہوگئی تھی اورانٹرنیٹ پر ناظرین کے لیے مفت دستیاب تھی۔

جب کہ سلمان خان نے اپنے فینز سے درخواست کی تھی کہ ’’ہم نے آپ کو اپنی فلم ’’رادھے‘‘ کو 249 بھارتی روپے کی مناسب قیمت پر دیکھنے کی پیشکش کی ہے۔ اس کے باوجود چند پائیریٹڈ ویب سائٹس فلم ’’رادھے‘‘ کو غیرقانونی طور پر دکھارہی ہیں جو ایک سنگین جرم ہے۔ سائبر سیل ان تمام غیرقانونی سائیٹس کے خلاف کارروائی کررہا ہے۔‘‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں