17

جعلی کورونا رپورٹس پر پاکستان کا سفر کرنے کے واقعات کا نوٹس

پاکستان آنیوالے مسافر تصدیق شدہ لیبارٹریز سے کورونا ٹیسٹ کرائیں، سی اے اے۔ فوٹو: فائل

پاکستان آنیوالے مسافر تصدیق شدہ لیبارٹریز سے کورونا ٹیسٹ کرائیں، سی اے اے۔ فوٹو: فائل

 کراچی: جعلی کورونا رپورٹس پر پاکستان سفر کرنے کے واقعات کا سول ایوی ایشن اتھارٹی نے نوٹس لے لیا۔

سی اے اے حکام نے پاکستان میں کام کرنے والی تمام ایئر لائنز کیلئے نئی ہدایات جاری کر دیں، جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق کچھ مسافروں نے جعلی پی سی آر منفی ٹیسٹ رپورٹ پر پاکستان کا سفر کیا، ایسے مسافروں نے ساتھ سفر کرنے والوں کو بھی خطرے میں ڈالا، ان واقعات سے کورونا پر قابو پانے کی قومی سطح پر کی جانے والی کوششوں کو بھی نقصان پہنچا۔

پاکستان آنے والے مسافرتصدیق شدہ لیبارٹریز سے ہی کورونا ٹیسٹ کرائیں، درست کیوآرکوڈ کے بغیر کسی مسافر کی منفی رپورٹ قبول نہیں کی جائے گی، رپورٹ کی کاپی قابل قبول نہیں ہوگی، ایسے مسافر جو پاس ٹریک ایپ میں رجسٹرڈ نہ ہوں وہ پاکستان سفر کے اہل نہیں ہیں، تمام ایئرلائینز ہدایات پر سختی سے عملدرآمد کرائیں، سول ایوی ایشن کے ساتھ ایئرلائن آپریٹرز،اسٹیک ہولڈرز کی بھی ذمے داری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں