27

سری لنکن کابینہ نے عوامی مقامات پر برقع پر پابندی کی منظور دیدی

اقوام متحدہ نے پابندی کو عالمی قوانین کی خلاف ورزری قرار دیا ہے

اقوام متحدہ نے پابندی کو عالمی قوانین کی خلاف ورزری قرار دیا ہے

کولمبو: سری لنکن کابینہ نے عوامی مقامات پر برقعہ پہننے پر پابندی کی منظوری دیدی ہے۔

سری لنکا کی کابینہ نے عوامی مقامات پر برقعہ پہننے یا چہرہ مکمل ڈھانپنے پر پابندی کی منظوری دے دی ہے تاہم پابندی کے اطلاق سے پہلے پارلیمنٹ سے منظوری لی جائےگی جہاں حکومت کی اکثریت ہے۔  مذہبی آزادی سے متعلق اقوام متحدہ کے نمائندے نے پابندی کو عالمی قوانین کی خلاف ورزری قرار دیا ہے۔

اس خبر کو بھی پڑھیں : سری لنکا کا نقاب پر پابندی اور اسلامی اسکولوں کو بند کرنے کا فیصلہ

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ سری لنکا نے ملک بھر میں ہزار سے زائد اسلامی اسکولوں کو بند کرنے اور خواتین کے نقاب لگانے پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا تھا، سری لنکا کے وزیر برائے عوامی تحفظ سارتھ ویراسکیرا نے برقع پہننے کو شدت پسندی قرار دیتے ہوئے ملک بھر میں نقاب پہننے پر پابندی عائد کرنے کی دستاویز پر دستخط کیے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں