34

غزہ میں اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ بندی کا امکان

 امریکی صدر جو بائیڈن کا اسرائیلی وزیراعظم کو ٹیلیفون، جنگ بندی کے لیے غزہ میں کشیدگی کم کرنے پر زور

امریکی صدر جو بائیڈن کا اسرائیلی وزیراعظم کو ٹیلیفون، جنگ بندی کے لیے غزہ میں کشیدگی کم کرنے پر زور

 واشنگٹن: غزہ میں گزشتہ 10 دنوں سے جاری اسرائیلی وحشیانہ بمباری کے بعد اب جنگ بندی کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق غزہ میں گزشتہ 10 دنوں سے جاری اسرائیلی بمباری کے بعد اب اسرائیلی حکومت اور فلسطینی مزاحمتی تنظیم حماس کے درمیان جنگ بندی کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے، مصری حکام نے حماس کی قیادت سے مذاکرات کیے ہیں جب کہ اسرائیلی نے تسلیم کیا ہے کہ اس نے فوجی اہداف حاصل کرلیے ہیں۔

امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ جنگ بندی کے لیے امریکا، مصر اور قطر سمیت دیگر یورپی ممالک اپنا کردار ادا کررہے ہیں، ان ممالک کی جانب سے غزہ کی خراب صورتحال کے باعث اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو اور حماس کی قیادت پر کشیدگی ختم کرنے کے لیے شدید دباؤ ہے۔

امریکی حکام کے مطابق بائیڈن انتظامیہ کو حالیہ ہفتے کے دوران ہی سیز فائر کی امید ہے کیوں کہ اسرائیل اور حماس کے درمیان کسی بھی قسم کا تصادم ایک بار پھر اس نازک صورتحال کو مزید خراب کرسکتا ہے۔

دوسری جانب امریکی صدر جو بائیڈن نے غزہ پر اسرائیلی بمباری کے بعد چوتھی بار اسرائیلی وزیراعظم کو ٹیلیفون کیا تاہم اس بار امریکی صدر نے جنگ بندی سے متعلق سخت موقف اپنایا اور دن کے اختتام تک کشیدگی میں واضح کمی پر زور دیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ 10 دنوں سے نہتے فلسطین پر اسرائیلی بمباری جاری ہے جس کے نتیجے میں اب تک 227 کے قریب افراد شہید اور ہزاروں زخمی ہوگئے ہیں جب کہ درجنوں عمارتیں بھی زمین بوس ہوگئی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں