18

لیگز نے کرکٹ ایشیا کپ کی قدر کم کر دی

بڑے ممالک کی عدم دلچسپی،اگلے برس ایونٹ ہوا تو پاکستان میزبانی کرے گا۔ فوٹو: فائل

بڑے ممالک کی عدم دلچسپی،اگلے برس ایونٹ ہوا تو پاکستان میزبانی کرے گا۔ فوٹو: فائل

 کراچی:  لیگز نے کرکٹ  ایشیاکپ کی قدر کم کر دی لہٰذا اس برس بھی شوپیس ایونٹ کیلیے جگہ نہیں نکل سکی۔

آخری مرتبہ ایشیا کپ 2018 میں منعقد ہوا تھا،2 سالہ ایونٹ کے اگلے ایڈیشن کا انعقاد 2020 میں ہونا تھا تاہم کورونا وائرس اور پھر بھارت کی جانب سے اپنی آئی پی ایل یو اے ای میں منعقد کرنے پر اصرار کی وجہ سے یہ ایونٹ رواں برس جون تک ملتوی کردیا گیا،اب کورونا اور مصروف ترین شیڈول کی وجہ سے انعقاد اس بار بھی نہیں ہو سکے گا۔

پی سی بی کے چیئرمین احسان مانی نے پہلے ہی عندیہ دے دیا تھا کہ اگر بھارت نے ٹیسٹ چیمپئن شپ فائنل میں جگہ بنائی تو یہ ایونٹ نہیں ہوسکے گا،اب بھارتی ٹیم نہ صرف فائنل کی ٹکٹ کٹوا چکی بلکہ جون میں پاکستان اپنی پی ایس ایل مکمل کرنے والا ہے۔

اگست میں سری لنکا اپنی لنکا پریمیئر لیگ کا اعلان کرچکا،بھارت کی نگاہیں ستمبر میں اپنی لیگ مکمل کرنے پر مرکوز ہیں جبکہ بنگلہ دیش لیگ بھی اس دوران منعقد ہونی ہے،ان تمام ٹیموں کی انٹرنیشنل مصروفیات بھی ایشیائی ایونٹ کے آڑے آرہی ہیں،بدھ کو میزبان سری لنکن بورڈ نے ایونٹ کے مزید التوا کا اعلان کر دیا تھا۔

رپورٹس کے مطابق اب ایشیا کپ کا اگلے 2 برس مسلسل انعقاد متوقع ہے،پاکستان2022کے ٹورنامنٹ کی میزبانی کرے گا جوآسٹریلیا میں آئندہ برس شیڈول ورلڈ کپ کے پیش نظر ٹی 20 فارمیٹ میں کھیلا جائے گا،2023 کے ایشیا کپ کی میزبانی سری لنکا کو ملے گی، یہ ون ڈے فارمیٹ میں ہوگا کیونکہ تب بھارت اکتوبر میں ایک روزہ ورلڈ کپ کی میزبانی کرے گا،ٹیموں کو ایشیائی ایونٹ سے میگا ٹورنامنٹ کی تیاری کا موقع میسر آئے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں